پرینکا گاندھی نے اپنے ایک ٹوئٹ میں یوگی حکومت کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے سوال کیا کہ ’’آخر کیا وجہ ہے کہ کچھ دکھاوٹی قدموں کی جگہ حکومت زہریلی شراب کے مافیاؤں پر کارروائی کرنے میں ناکام رہی ہے؟‘‘

21 نومبر 2020(سیدھی بات نیوز سرویس) اتر پردیش میں زہریلی شراب سے ہو رہی اموات کو لے کر کانگریس جنرل سکریٹری پرینکا گاندھی نے آواز اٹھائی ہے اور یوگی حکومت کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کئی سوال کھڑے کیے ہیں۔ انھوں نے کہا ہے کہ حکومت زہریلی شراب کا کاروبار کر رہے مافیاؤں پر کارروائی کرنے میں پوری طرح ناکام رہی ہے، جس کا نتیجہ یہ ہے کہ لگاتار اموات کی خبریں سامنے آ رہی ہیں۔ پرینکا گاندھی نے اس سلسلے میں ایک ٹوئٹ کیا ہے جس میں لکھا ہے کہ ’’یو پی میں لکھنؤ، فیروز آباد، ہاپوڑ، متھرا، پریاگ راج سمیت کئی مقامات پر زہریلی شراب سے اموات ہوئی ہیں۔ آگرہ، باغپت، میرٹھ میں زہریلی شراب سے اموات ہوئی تھیں۔ آخر کیا وجہ ہے کہ کچھ دکھاوٹی قدموں کی جگہ حکومت زہریلی شراب کے مافیاؤں پر کارروائی کرنے میں ناکام رہی ہے؟ کون ذمہ دار ہے؟‘‘ اس کے ساتھ ہی پرینکا گاندھی نے تین اضلاع کی خبروں کا اسکرین شاٹ شیئر کیا ہے جس میں زہریلی شراب سے ہوئیں اموات کا تذکرہ ہے۔قابل ذکر ہے کہ اتر پردیش میں ان دنوں زہریلی شراب سے اموات کے واقعات لگاتار پیش آ رہے ہیں۔ لکھنؤ، متھرا کے بعد پریاگ راج میں معاملہ سامنے آئے ہیں جس کے بعد سے یوگی حکومت پر سوال اٹھنے شروع ہو گئے ہیں۔ سنگم نگری پریاگ راج (الٰہ آباد) میں زہریلی شراب پینے سے 6 لوگوں کی موت ہو گئی ہے جب کہ 15 لوگ سنگین طور پر بیمار ہیں۔ سبھی بیماریوں کو نزدیکی سوروپ رانی نہرو اسپتال میں داخل کرایا گیا ہے۔ یہ واقعہ ضلع کے پھول پور تھانہ حلقہ کے ایک گاؤں میں پیش آیا ہے۔ انتظامیہ نے شراب کے ٹھیکہ کو سیل کر دیا ہے اور معاملے کی جانچ کی جا رہی ہے۔

(قومی آواز)

SHARE

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here