عراق کی مسلح افواج نے ترکی کی سرحد سے متصل علاقوں میں اضافی نفری تعینات کرنے کے ساتھ ترکوں کی دراندازی روکنے کے لیے مزید چوکیاں قائم کرنا شروع کی ہیں۔

04 جولائی 2020(سیدھی بات نیوز سرویس) عراق کی سیکیورٹی فورسز کے عہدیداروں نے جمعہ کے روز بتایا کہ فوج نے ترکی کی سرحد پر ترک فوج کی درندازی روکنے کے لیے اضافی چیک پوسٹیں قائم کی ہیں۔ یہ اقدام ترکی کی جانب سے عراق میں کرد باغیوں کے ٹھکانوں پر دو ہفتیسے جاری بمباری کے بعد کیا ہے۔ ترک فوج شمالی عراق میں صوبہ کردستان میں کردوں کے خلاف آپریشن جاری رکھے ہوئے ہے۔ عراقی حکام نے بتایا کہ فوج نے ترکی کی سرحد سے متصل علاقوں میں دراندازی روکنے کے لیے کم سے کم 12 چیک پوسٹیں قائم کی ہیں۔ یہ چیک پوسٹیں کردستان ورکرز پارٹی کے ارکان کے تعاقب اور ترک فوج کی سرحدی دراندازی روکنے کے لیے قائم کی گئی ہیں۔ خیال رہے کہ ترکی کا دعویٰ ہے کہ شمالی عراق کے صوبہ کردستان میں کرد باغیوں نے اپنے ٹھکانے بنا رکھے ہیں جو ترکی سے علاحدگی کی تحریک چلانے کے ساتھ ساتھ ترکی پر حملے بھی کرتے ہیں۔ ترکی نے سترہ جون کو شمالی عراق میں کرد باغیوں کے خلاف فوجی آپریشن شروع کیا تھا۔ ترکی کے جنگی طیاروں کی کردستان میں بمباری سے کرد باغیوں کے علاوہ عام شہری بھی جاں بحق ہوئے ہیں۔ ترک طیاروں کی بم باری سے فوت ہونے والے عام شہریوں کی تعداد چھ بتائی جاتی ہے۔

(العربیہ)

SHARE

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here