مایاوتی نے کہا کہ اصل میں مرکز نے دیر سے ہی صحیح 20 لاکھ کروڑ روپے کے جس اقتصادی پیکیج کا اعلان کیا ہے اس کا بھی عوامی مفاد میں مناسب استعمال کا امتحان اب یہاں ہونا ہے۔

نئی دہلی:  29 مئی 2020(سیدھی بات نیوز سرویس) بہوجن سماج پارٹی کی صدر مایاوتی نے جمعہ کے روز کہا کہ مہاجر مزدوروں کو روزی روٹی فراہم کرنا مرکزی اور ریاستی حکومتوں کا اصل امتحان ہے۔ مایاوتی نے سلسلہ وار ٹوئٹ میں کہا کہ مہاجر مزدوروں کے ساتھ انصاف ہونا چاہیے۔ انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم نریندر مودی کے 20 لاکھ کروڑ روپے کے امدادی پیکیج کی آزمائش مہاجر مزدوروں کو انصاف دلانا ہے۔ انہوں کہا کہ مرکزی اور ریاستی حکومتوں کی اولین ترجیح مہاجر مزدوروں کو روزی روٹی فراہمی ہونی چاہیے۔ بی ایس پی لیڈر نے کہا ’کہ ملک میں گزشتہ 66 دن سے جاری لاك ڈاؤن کی وجہ سے ہرطرح سے نظر انداز اور نفرت سے متاثر کسی نہ کسی طرح گھر واپس لوٹنے والے لاکھوں مہاجر مزدوروں کے لئے آخر کارعدالت کو کہنا پڑا کہ ریل اور بسوں سے انہیں مفت گھر بھیجنے کی پوری ذمہ داری حکومتوں کی ہے۔ جبکہ بی ایس پی کے اس مطالبے کو حکومت نظر انداز کرتی رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ خاص طور پر اتر پردیش اور بہار واپس جا رہے ان بے سہارا لاکھوں مہاجر کارکنوں کی روزی روٹی کا بنیادی مسئلہ حل کرنا مرکز اور ریاستی حکومتوں کا اب پہلا فرض بنتا ہے۔ انہیں ان کے گھر کے آس پاس مستقل روزگار فراہم کرنا ہی حکومت کی نیت، پالیسی اور خلوص کا اصل امتحان ہے۔ مایاوتی نے کہا کہ اصل میں مرکز نے دیر سے ہی صحیح 20 لاکھ کروڑ روپے کے جس اقتصادی پیکیج کا اعلان کیا ہے اس کا بھی عوامی مفاد میں مناسب استعمال کا امتحان اب یہاں ہونا ہے۔ عوام اپنی حالت زار اور بدحالی کے لئے حکومتوں کی طرف سے کیے گئے نظرانداز اور نفرت کو شاید ہی آگے بھلا پائیں۔ انہیں جینے کے لئے انصاف چاہیے۔

(قومی آواز)

SHARE

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here