نوٹیفکیشن کے مطابق وزیراعظم عمران خان8رکنی مشترکہ مفادات کونسل کے چیئرمین ہوں گے اور چاروں صوبوں کے وزرائے اعلیٰ کونسل میں شامل ہوں گے

20 ڈسمبر (سیدھی بات نیوز سرویس) صدر مملکت نے مشترکہ مفا دات کونسل کی تشکیل نوکردی ہے۔صدر مملکت نے آئین کے آ رٹیکل 153 کے تحت کونسل کی تشکیل کی منظوری دی ہے۔ اس سے قبل 31اگست 2018 کو یہ کونسل تشکیل دی گئی تھی۔ 8رکنی کونسل کے چیئرمین وزیر اعظم عمران خان ہیں۔ دیگر سات ممبران میں وزیر اعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار، وزیر اعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ، وزیر اعلیٰ خیبر پختونخواہ محمود خان، وزیر اعلیٰ بلوچستان جام کمال خان، وفاقی وزیر بر ائے منصوبہ بندی و ترقیات اسد عمر، وزیر بر ائے بین الصو بائی رابطہ ڈویژن ڈاکٹر فہمیدہ مرزا اور وزیر توانائی عمر ایوب خان شامل ہیں۔نوٹیفکیشن کے مطابق وزیراعظم عمران خان8رکنی مشترکہ مفادات کونسل کے چیئرمین ہوں گے اور چاروں صوبوں کے وزرائے اعلیٰ کونسل میں شامل ہوں گے۔نوٹیفکیشن میں کہا گیا ہے کہ کونسل سے مشیر صنعت و تجارت عبدالرزاق داؤد کی رکنیت ختم کردی گئی ہے، وزیر پاور ڈویژن کو سی سی آئی کا ممبر بنا دیا گیا ہے، وزیر بین الصوبائی رابطہ ڈاکٹر فہمیدہ مرزا اور وزیر منصوبہ بندی اسد عمر مشترکہ مفادات کونسل کے ممبران ہوں گے۔واضح رہے کہ مشترکہ مفادات کونسل یا سی سی آئی پاکستان کا ایک آئینی ادارہ ہے جس کا مقصد وفاق اور صوبوں کے درمیان اختیارات اور دیگر معاملات پر جاری اختلافات کو ختم کرنا ہے۔مشترکہ مفادات کونسل کو 1973ء کی آئین کی روشنی میں قائم کیا گیا ہے، سابق صدور پرویز مشرف اور آصف زرداری دور میں یہ کیبنٹ ڈویژن کے ماتحت ادارہ تھا۔آئین پاکستان میں اٹھارہویں ترمیم کے بعد یہ ادارہ وزارتِ بین الصوبائی ہم آہنگی کو سونپا گیا ہے، سی سی آئی بنیادی طور پر وزیر اعظم پاکستان اور چاروں صوبائی وزرائے اعلیٰ پر مشتمل ہوتا ہے۔

(ٹی آر ٹی)

SHARE

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here