29 نومبر (سیدھی بات نیوز سرویس) سعودی عرب اور متحدہ عرب امارات نے باہمی تزویراتی شراکت کے تحت بھارت میں تیل صاف کرنے کے ایک میگا منصوبے کی منظوری دی گئی ہے۔ یہ منصوبہ بھارت کی مغربی ریاست مہاراشٹر میں 70 ارب ڈالر مالیت کی آئل ریفائنری اور جدید پیٹرو کیمیکل کمپلیکس پرمشتمل ہوگا۔خبر رساں اداروں کے مطابق مہاراشٹر میں سعودی عرب اور امارات کے مشترکہ تزویراتی منصوبے میں سعودیہ کی تیل کی سب سے بڑی کمپنی آرامکو اور ابوظہبی نیشنل آئل کمپنی ‘ایڈنوک’ مل کر کام کریں گی۔ اس منصوبے میں ایک ایسی آئل ریفائنری قائم کی جائے گی جس میں روزانہ 12 لاکھ بیرل صاف کرنے کی گنجائش ہو گی۔ اس منصوبے کی تکمیل کے بعد بھارتی مارکیٹ کو یومیہ چھ لاکھ بیرل تیل فراہم کیا جائے گا۔اس اقدام کا مقصد ہندوستانی ریفائنری اور پیٹروکیمیکل مارکیٹ میں سعودی عرب اور متحدہ عرب امارات کے خام تیل کی فروخت کی راہ ہموار کرنا اور جدید ترین بین الاقوامی تکنیکی خصوصیات کے حامل منصوبے کے ذریعے پٹرول، جیٹ فیول، ڈیزل، کیمیائی مصنوعات میں استعمال ہونے والے تیل کیعلاوہ نقل وحمل کے ایندھن کی تیاری شامل ہے۔اس منصوبے کا اصل ہدف ہندوستانی مقامی مارکیٹ ہے۔ آنے والے وقت میں بھارت میں تیل کی کھپت میں غیر معمولی اضافے کی توقع کی جا سکتی ہے۔ذرائع نے رائیٹرز کو بتایا کہ ممبئی سے تقریبا 100 کلومیٹر جنوب میں مغربی ریاست مہاراشٹر میں قائم آئل ریفائنری میں یومیہ 1.2 ملین بیرل تیل ذخیرہ کرنے کی گنجائش ہوگی۔ رواں سال ستمبر میں بھارتی وزیر برائے پٹرولیم نے بتایا تھا کہ مہاراشٹر آئل ریفائنری پر 45 ارب ڈالر کی لاگت آئے گی۔

(العربیہ)

SHARE

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here