بنگلور:30 مئی 2019(سیدھی بات نیوز سروس/ زرائع)(محمد فرقان) امت مسلمہ میں فتنوں کا ظہور کوئی نئی بات نہیں ہے۔ہمارے آقاﷺاپنی حیات مبارکہ ہی میں امت کو فتنوں کے سلسلے میں آگاہ کرچکے ہیں۔بالخصوص قرب قیامت کے تعلق سے آپؐ کی پیشین گوئی ہے کہ بارش کے قطروں کی طرح تسلسل کے ساتھ فتنے رونما ہوں گے، آپؐ کی پیشین گوئیوں کے مطابق اس وقت نت نئے فتنے سراٹھارہے ہیں۔اور یہ بھی حقیقت ہیکہ بیشتر فتنے دعوائے مہدیت اور دعوائے نبوت کے راستہ سے اٹھ رہے ہیں۔انہیں میں سے ایک حالیہ دنوں میں پاکستان کی سرزمین سے ایک فتنہ”فتنہ گوہر شاہی“ کے نام سے سر اٹھایا ہے۔جس کا بانی ریاض احمد گوہر شاہی ہے۔جس نے پہلے مہدیت پھر مسیحیت، اسکے بعد نبوت اور بالآخر خدائی کا دعویٰ کیا تھا۔اُس وقت برصغیر کے اکابر علماء دیوبند اور دارالافتاء اور تمام مکاتبِ فکر والوں نے اسے اور اسکے ماننے والوں کو اسلام سے خارج قرار دیا۔مذکورہ خیالات کا اظہار ممتاز عالم دین، شیر کرناٹک، شاہ ملت حضرت مولانا سید انظر شاہ قاسمی مدظلہ نے کیا۔شاہ ملت نے فرمایا کہ جب ملعون گوہر شاہی پر کفر کا فتویٰ صارد ہوا تو وہ ملک چھوڑ کر لندن منتقل ہوگیا اور1 200ء میں وہ جہنم رسید ہوا۔اسکے بعد اسکا بیٹا یونس گوہر شاہی فتنہئ گوہر شاہی کا پیشوا بن گیا ہے اور اسلام مسلمان دشمنوں کی طاقت سے ہر آئے دن سوشل میڈیا کے ذرائع ابلاغ کی مدد سے امت کو گمراہ کررہا ہے۔مولانا نے افسوس ظاہر کرتے ہوئے فرمایا کہ ماضی قریب میں فتنہ گوہر شاہی ہندوستان آپہنچا ہے۔ملک کے مختلف ریاستیں دہلی، مہاراشٹر، کرناٹک، بہار،پنجاب اور مشہور شہر دہلی، ممبئی، بنگلور، پونہ وغیرہ میں اس فتنہ کی گند محسوس کی گئی ہے۔اور امت مسلمہ کی ایک بڑی تعداد جو مساجد و مدارس، خانقاہ و مراکز، علماء و صلحاء سے دور ہے وہ اس فتنہ کا شکار ہوتی جارہی ہے۔ مولانا قاسمی نے فرمایا کہ ہمارے ملک خصوصاًشہر گلستان بنگلور میں فتنہئ گوہر شاہی عروج پر ہے۔ابھی حالیہ دنوں میں شہر بھر میں اس فتنہ اور اسکی تشریح کرنے والے چینل ”الرا ٹی وی“ سے جڑنے کیلئے اشتہارات لگائے گئے ہیں۔جس کی وجہ سے ایک بڑی تعداد گمراہی کے راستے پر چل پڑی ہے۔شاہ ملت نے دوٹوک فرمایا کہ گوہر شاہی اور اسکے ماننے والے سب اسلام سے خارج ہیں۔انہوں نے مسلمانوں کو متوجہ کرتے ہوئے فرمایا کہ اس فتنہ سے مسلمان خود بچیں اور دوسروں کو بھی بچائیں۔مولانا سید انظر شاہ قاسمی نے ائمہ و خطباء حضرات سے بھی اپیل کی کہ وہ منبر و محراب سے اس فتنے کی پُر زور مخالفت کریں، جو لوگ گمراہ ہوچکے ہیں انکی ہدایت اور امت مسلمہ کے سامنے فتنہئ گوہر شاہی کی حقیقت کو واضح طور پر بیان فرمائیں۔ یہ ہمارا دینی و ایمانی فریضہ ہے۔

SHARE

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here