بنگلور:17اپریل )(سیدھی بات نیوز سرویس ) یہ اطلاع آپ کو فراہم کرتے ہوئے بڑی شادمانی ہورہی ہے کہ الحمدللہ ، رب کائناب کے فضل و کرم سے سیدھی بات چینل نے محض دو سال کے اندر مقبولیت اور شہرت کی بلندیوں کو چھوتے ہوئے تین لاکھ کے قریب سبسکرائبر اور روزانہ اپنی خبروں کو مختلف ذرائع کا استعمال کرتے ہوئے قریب دسیوں لاکھ افراد تک پہنچاتا ہے۔ علاوہ ازیں، اس وقت یہ اپنے اول دن میں جو منصوبے بنایاتھا ا سکو پورا کرنے کے جانب بھی پوری سنجیدگی سے آگے بڑھ رہاہے ۔اُردو ، انگریزی ، اور کنڑی زبان کے بعدآج یہ خصوصی علماء کرام کی نشست میں ادارہ سیدھی بات نے اپنے ہندی ویب سائٹ کو منظر عام لایا، اس دعائیہ نشست کے آغاز میں ایڈیٹر سیدھی بات نے بتایا کہ یہ محض اللہ ہی کا فضل ہے کہ دو سال سے بھی بہت کم عرصہ میں اللہ نے اس ادارے کو مقبولیت سے نوازا ہر گذرتے ایام کے ساتھ نئے نئے پروگرام منظر عام پر لارہاہے، جس کی پذیرائی کی جارہی ہے، اور ساتھ ہی یہ بھی اعلان کردیا کہ شوال کے مہینے میں انشاء اللہ عربی ویب سائٹ کو بڑے پیمانے پر لانچ کیا جائے گا،ملحوظ رہے کہ ہندی ویب سائٹ کا اجراء اس اجلاس کے مہمانِ خصوصی حضرت مولانا سلمان حسینی ندوی دامت برکاتہم کے ہاتھوں ہوا، اور اس کے بعد مولانا نے صحافت کی تاریخ پر ذرائع ابلاغ کی اہمیت اور آپ ﷺ نے جس اسلام کی تبلیغ کے لئے اس کے جن ابلاغ کا استعمال کیا تھا ، اس کا تفصیلی جائزہ پیش کرتے ہوئے قرآن و حدیث کے روشنی میں یہ بتایا کہ کس طرح سرد جنگ کو سرد جنگ سے ختم کرنے کی ضرور ت ، یہ خطاب پرمغز اور ہر میڈیا سے وابستہ احباب کو سننا چاہئے، اس بیان کو انشاء اللہ کل چینل میں اپلوڈ کردیا جائے گا۔ اس اجلاس میں امیرِ شریعت کرناٹک حضرت مولانا صغیر احمد رشاد دامت برکاتہم نے بھی مصروفیت کے باجود اپنے ایک متعینہ اجلاس کے اختتام کے بعد مجلس میں شرکت کرکے ایڈیٹر سیدھی بات کو جہاں مبارکبادی پیش کی وہیں، حضرت مولانا سلمان حسینی ندوی دامت برکاتہم سے علمی گفتگو کی۔ اس اجلاس کا آغاز مولانا عبدالحفیظ ندوی کے دعائیہ کلمات سے شروع ہوا، یہ اجلاس مولانا عبدالمعز ندوی ، بوپسندرا، ہیبال میں منعقد کیا گیاتھا، مشہو ر شاعر جناب عزیزبیلگامی نے اپنا نعتیہ کلام بھی پیش کیا۔ حضرت مولانا سلمان حسینی ندوی دامت برکاتہم نے دعا فرمائی، یاد رہے کہ اجلاس میں شریک علماء کو اپنے اعتراضات سامنے رکھنے کا بھی موقع دیا گیا، اور مولانا شمیم سالک مظاہری سمیت دیگر احباب نے مولانا پر اُٹھائے جانے والے اعتراضات کا جواب مانگا تو مولانا نے اس کا کھل کر مدلل جواب دیا ہے، ا سکو بھی انشاء للہ بہت جلد اپلوڈ کردیا جائے گا: ہندی ویب سائٹ کی لنک نیچے دی گئی ہے: اس کا دیدار کرلیں، اور بار بار وژٹ کرتے ر ہیں،ا ور ساتھ ہی انگریزی، کنڑا اور اُردو ویب سائٹس سے بھی استفادہ کردیں: آپ کسی بھی ایک ویب سائٹ میں چلے جائیں تو وہیں سے دیگر زبانوں کے ویب سائٹ پر جاسکتے ہیں:

Home

SHARE

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here