بنگلور: 09اپریل (سیدھی بات نیوز سرویس ) ریاستِ کرناٹک میں اٹھارہ اپریل کو پارلیمانی انتخابات کے لئے ووٹنگ ہونے والی ہے، شہر بنگلورسمیت پوری ریاست میں اس وقت سیاسی پارٹیوں کے اُمیدواروں کا ہنگامہ ہے، اس بیچ بنگلور سنٹرل جو شہر کا اہم ترین پارلیمانی حلقہ ماناجارہاہے اور پھر پورے شہر میں ایک مسلم اُمیدوار ہونے اور پھر آزاد اُمیدوار پرکاش راج کے مضبوط دعویدار ہونے کی وجہ سے بڑی ہی دلچسپی سے اس حلقے کو دیکھاجارہاہے، ایک طرف اقلیتیں مختلف بہانوں سے پرکاش راج کے ساتھ جڑ کر کام کرنے کا ارادہ ظاہر کررہے ہیں تو دوسری جانب کانگریس کے اُمیدوار اپنا مقابلہ بی جے پی اُمیدوار کے ساتھ بتارہے ہیں، مگر زمین حقائق کچھ اور بتاتی ہیں، سیدھی بات کے نمائندے کے مطابق پرکاش جہاں جاتے ہیں عوام ازبخود جمع ہورہی ہے،اور پھر وہیں سیاسی بیان شرو ع ہوجاتاہے، لوگوں کا ایک جم غفیر ہے جو ہر طرف ان کے ساتھ چلنے کے لئے بے قرار نظر آرہاہے، ایک شخص نے اپنا نام ظاہر نہ کرنے کے شرط پر سیدھی بات سے کہا کہ اس بات پوری ہوا پرکاش راج کی جانب جارہی ہے، جس کو دیکھ کر محسوس ہوتاہے کہ بنگلور سنٹرل میں کانٹے کا ٹکر ہوگا، اجلاس منعقد کرنے کے بجائے اور پرکاش راج گھر گھر جاکر سیاسی مہم چلارہے ہیں اور ووٹروں کو ان کے مسائل کے سلسلہ میں آگاہی دے رہے ہیں، بنگلور سنٹرل کے مختلف علاقوں میں آج پرکاش راج نے سیاسی ریالی نکالی، اب دیکھنا ہے کہ کہ بی جے پی کانگریس میں راست مقابلہ ہے یا پھر پرکاش راج اور بی جے پی میں یا پھر پرکاش راج اور کانگریس میں۔

SHARE

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here