مقبوضہ بیت المقدس:14مارچ2019(سیدھی بات نیوز سروس/ زرائع)اسرائیلی فوج نے فلسطین کے مقبوضہ مغربی کنارے، بیت المقدس اور سنہ 1948ء کے فلسطینی علاقوں میں گھر گھر تلاشی کی کارروائیوں کے دوران 27 فلسطینیوں کو شہید کر دیا۔ شہداء میں ایک فلسطینی رکن پارلیمنٹ اور کئی سابق اسیران شامل ہیں۔مرکز اطلاعات فلسطین کے مطابق ‘حماس’ کے پارلیمانی بلاک اصلاح وتبدیلی کے دفتر سے جاری ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ صہیونی فوج نے بیت المقدس سے بے دخل کیے گئے فلسطینی رکن پارلیمنٹ 66 سالہ محمد ابو طیر کو حراست میں لے لیا۔ابو طیر کی گرفتاری البیرہ کے جنوبی علاقے ام الشرایط سے عمل میں لائی گئی۔ خیال رہے کہ ابو طیر 18 سال تک اسرائیلی جیلوں میں قید کاٹ چکے ہیں۔اسرائیلی فوج نے مشرقی طولکرم میں ایک کارروائی کے دوران سابق اسیر عزالدین ابو دیہ کو اس کے گھر سے گرفتار کیا گیا۔ادھر جنین شہر میں ایک کارروائی کے دوران قلقیلیہ سے متعدد فلسطینیوں‌ کو حراست میں لیا گیا۔ قابض فوج نے غرب اردن کےشمال مشرقی شہر اریحا، وسطی شہر رام اللہ، نابلس، الخلیل اور سنہ 1948ء کے مقبوضہ فلسطینی علاقوں دو درجن سے زاید فلسطینیوں‌ کو حراست میں لے کر نامعلوم مقام پر منتقل کر دیا۔عینی شاہدین اور مقامی ذرائع نے بتایا کہ صہیونی فوج نے گھر گھر تلاشی کے دوران لوٹ مار اور گھروں میں موجود قیمتی سامان کی توڑپھوڑ بھی کی۔

SHARE

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here