11 فروری 2019(سیدھی بات نیوز سروس/ زرائع)میڈیکل سائنس نے حال ہی وہ کرشمہ کر دکھایا، جس کے بارے میں کوئی سوچ بھی نہیں پا رہا تھا۔ امریکہ میں ہوئے ایک سروے میں پایا گیا ہے کہ کینسر جیسی سنگین بیماری کو بھی پوری طرح سے ٹھیک کیا جا سکتا ہے۔ تحقیق کےمطابق کینسر کے اعلاج میں استعمال ہونے والی یہ قدرتی چیز اتنی کارگار ہے کہ ان کو کھانے کے بعد محض 48 گھنٹوں کے اندر کینسر کا اعلاج ممکن ہے۔کنسر ان سنگین بیماریوں میں سے ایک ہے، جو کسی کو بھی ہو جائے تو اس سے بچ پانا بےحد مشکل ہوتا ہے۔ اس بیماری کا اعلاج بھی بہت کم جگہ پر مہیا ہے اور جہاں پر ہے وہ اتنا مہنگا ہے کہ ہر کسی کے لئے ممکن نہیں ہےکینسر کے اعلاج کے لئے ہونے والی کیموتھیریپی بھی کئی بار مریض کی جان لے لیتی ہے۔ ان سب کے بیچ کیلی فورنیا یونیورسٹی میں مریضوں پر تحقیق کرنے بعد یہ نتائج نکلےہیں کہ کینسر کے مریضوں کو انگور کے بیج کے رس کو کھانے سے بہت تیزی سے اس کے بہتر نتائج نظر آنے لگتے ہیں۔کالج کے میڈیکل فزیکس اور سائکولاجی کے سینئر پروفیسر ڈاکٹر ہارڈن بی جانس نے بتایا کہ تقریبا 25 سالوں تک چلی اس تحقیق میں سامنے آیا ہے کہ انگور کے بیج سے نکلنے والا رس اس بیماری پر بہت تیزی سے اثر کرتا ہے۔ تحقیق میں پایا گیا ہے کہ انگور کے رس کا اثر اتنی تیزی سے ہوتا ہےکہ تقریبا 48 گھنٹوں کے اندر ہی ہمارے سامنے نتائج آنے شروع ہو گئے تھے۔

SHARE

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here