05 جنوری2019(سیدھی بات نیوز سروس/ زرائع)متحدہ امریکہ میں بجٹ بحران حل ہونے کو نہیں آرہا۔خیال رہے کہ صدر ڈونلڈ ٹرمپ میکسیکو کی سرحدوں پر دیوار کھڑی کرنے کے لیے بجٹ سے حصے کے مطلوب ہیں تو ڈیموکریٹس اس مطالبے کو مسترد کرتے چلے آئے ہیں۔امریکی صدر نے ڈیموکریٹ رہنماؤں کو خبردار کیا ہے کہ وہ وفاقی حکومت کا جزوی شٹ ڈاؤن کئی مہینے بلکہ کئی برسوں تک بھی جاری رکھنے پر تیار ہیں۔انہوں نے یہ بیان کانگریس میں ڈیموکریٹ رہنماؤں نے جمعے کو صدر ٹرمپ کے ساتھ ملاقات کے بعد صحافیوں کو بتائی۔ڈیموکریٹ رہنماؤں کو ملاقات کی دعوت صدر ٹرمپ نے دی تھی جس میں 22 دسمبر سے جاری حکومت کے جزوی شٹ ڈاؤن کے خاتمے پر بات چیت کی گئی۔ملاقات کے بعد وائٹ ہاؤس کے باہر صحافیوں سے گفتگو میں سینیٹ میں ڈیموکریٹس کے قائد چک شمر نے بتایا کہ ڈیموکریٹس رہنماؤں نے ملاقات میں صدر پر زور دیا کہ وہ شٹ ڈاؤن ختم کریں۔لیکن ان کے بقول صدر نے اس مطالبے کو ماننے سے انکار کیا اور “درحقیقت انہوں نے کہا کہ وہ حکومت کو ایک طویل عرصے، مہینوں یا پھر کئی سال تک کے لیے بھی بند رکھنے پر تیار ہیں۔”ٹرمپ نے ان سخت بیانات کے بعد یہ بھی کہا ہے کہ یہ بحران ہر کس کی سوچ سے کہیں زیادہ قلیل مدت میں دور ہو جائیگا۔نہوں نے کہا کہ مذاکراتی عمل کے ذریعے دیوار کی تعمیر ایک بہتر راستہ ہے لیکن اگر ضرورت پڑی تو وہ ملک کو درپیش سکیورٹی خطرات کے پیشِ نظر ہنگامی حالت نافذ کرسکتے ہیں اور اس کے تحت ملنے والے اختیارات استعمال کرکے دیوار تعمیر کرالیں گے۔واضح رہے کہ امریکہ کے سابق صدور حالتِ جنگ میں ہنگامی حالت نافذ کرتے رہے ہیں جس کے تحت انہیں کئی معاملات میں کانگریس کو بائی پاس کرنے کے اختیارات حاصل ہوجاتے ہیں۔

SHARE

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here