بنگلور : 22دسمبر (سیدھی بات نیوز سرویس )شہر بنگلور کے مشہورتعلیمی ادارے توکل اور وژڈم انٹرنیشنل اسکول (بنگلورو) کے زیرِ اہتمام پیغام امن و محبت کے سبق کے ساتھ آج پولس گراؤنڈ ہیگڈے نگر میں اسپورٹس ڈے کا خوبصورت، شاندارانعقاد کیا گیا ،جو اپنے ایک انوکھے پن کے ساتھ ساتھ ملک میں امن و آشتی اور بھائی چارگی کی عمدہ مثال پیش کررہاتھا۔ وژڈم اور توکل اسکول کے سی ای او جناب فیاض شریف صاحب نے یہاں سیدھی بات سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ اسپورٹس ڈے کوبھی ہم ایک پیغام دینے کاذریعہ بناسکتے، اسی وجہ سے یہ امسال اسپورٹس ڈے کو بامعنی بنانے کے لئے اسپورٹس کا آغاز ایسے جھانکی سے کیا گیا جس میں تینوں مذاہب،(ہندو، مسلم ، عیسائی) ایک ہی گھوڑ سواری پر بیٹھے ، بھائی چارگی اور امن کا پیغام دے رہے تھے، پہلی جھانکی میں ہندو مسلم بھائی چارگی تھی تو دوسرے میں طلباء نے سرپرستان اور والدین کو پیغام دے رہے تھے کہ وہ ان کو وقت دیں،ان سے روگردانی اختیار نہ کریں اور تیسرے میں ایک بزرگ کو بٹھایا گیا تھا اس پیغام کے ساتھ کہ وہ بڑوں کا احترام کیا جائے ، یہ مناظر واقعی قابلِ دید بھی تھے اور قابلِ سراہنا بھی، اس کے بعد بچوں نے مختلف قسم کے پیغامات کی تختیاں اُٹھا کر پورے گراؤنڈ میں مار چ کیا ، یہاں بھی بچے مختلف قسم کے الگ الگ پیغامات کے تختیاں اُٹھائے ہوئے تھے جو عوام کا دھیان اپنی جانب کھینچ رہے تھے، بہترین اور دلکش اندازہ میں کھیل مقابلے پیش کئے گئے ، جس میں ڈرل مارچ، ورزشی نمونے تھے، اور پھر کراٹے اور مارشل آرٹ کے بھی کئی شاٹس یہاں طلباء نے دکھائے جو قابل تعریف تھے، نھنی بچے او ربچیوں کے بھی دوڑ کے الگ الگ قسمیں منعقد کئے گئے تھے۔ اخیر میں بڑے طلباء نے بھی خوبصورت انداز میں گنبد بنانے اورایک دوسرے کی مدد سے رسکی کھیل کے نمونے پیش کئے جو واقعی قابلِ دید تھے، من جملہ طو رپر توکل ، وژڈم نیشنل اسکول کے طلباء نے نہ صرف کھیلوں کا مظاہر ہ کیا بلکہ کھلے میدان میں پورے ڈسپلن کے ساتھ کس طرح ہر کھیل کے ساتھ ایک بہترین پیغام دیاجاسکتاہے اس کو بھی بتایا ہے، اخیر میں اس اجلاس کے مہمانانِ خصوصی میں سے سوامی مرلی دھرن اور فادر البرٹ نے اپنے مختصر خطاب میں طلباء کی کارکردگیوں کو سراہا، اور اسپورٹس کے ذریعہ لوگوں تک ایک بہترین پیغام پہنچانے کی پہل کو عمدہ قرار دیتے ہوئے کہا کہ اس طرح دیگر اسکول و اکالج میں بھی ہوتو سماج میں ایک بہترین پیغام جائے۔ مہمانِ خصوصی مولانا عبدالستار شاہی و قاسمی صاحب نے بھی اپنے خطاب میں بچوں کی جہاں سراہنا کی وہیں قرآن وحدیث کی روشنی میں بچوں کی تربیت پر روشنی ڈالی، اس موقع پر جناب جعفر شریف ڈائرکٹر چامراج پیٹ وژڈم اسکول، اور مولانا ممتاز جھارکھنڈ ڈائرکٹر مدنی پبلک اسکول جوکہ وژڈم اسکول کے ہی ماتحت میں چلتاہے ،موجود تھے، انہی مہمانوں کے ہاتھوں اول دوم اور سوم آنے والے طلباء کو انعامات سے بھی نوازا گیا۔ مفتی مولانا مسیح اللہ ندوی صاحب نے نظامت کے فرائض انجام دئے جب کہ ان کے ساتھ اسکول کے ہونہار طلبہ نے بھی انگریزی میں وقتاً فوقتاًمولانا کا ساتھ دیتے رہے ، کڑی دھوپ میں اسکول کے اساتذہ و خاتون اُستانیوں کی محنت قابلِ دید او رتعریف تھی،۔

SHARE

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here