نئی دہلی:17 نومبر(سیدھی بات نیوز سروس/ زرائع)نومبر(یو این آئی) کانگریس نے رافیل لڑاکا طیارہ سودے کے بارے میں آئی سی آئی سی آئی بینک کے دستاویزات میں نئے حقائق کے انکشاف کا دعوی کرتے ہوئے آج کہاکہ سودے کی قیمت کے خفیہ رکھنے کے تعلق سے مسلسل پول کھلنے کے بعد بھی وزیر اعظم نریندر مودی خاموش ہیں اور ان کی یہ خاموشی ملک کے لئے خطرناک ہے۔کانگریس کے ترجمان پون کھیڑا نے آج یہاں اخباری کانفرنس میں کہا کہ آئی سی آئی سی آئی بینک کی گزشتہ سال 28فروری کو ہونے والی منیجنگ ڈائریکٹر کی میٹنگ کے دستاویزات میں رافیل سودے میں طیاروں کی قیمت کا ذکر ہے۔ اس سلسلے میں انہوں نے بینکوں کے مینجمنٹ میٹ نوٹ، کا ثبوت پیش کیا اور کہا کہ اس نوٹ سے واضح ہے کہ حکومت حقائق کو چھپارہی ہے۔مسٹر کھیڑا نے کہا کہ حکومت مسلسل دعوی کررہی ہے کہ سلامتی اسباب کی وجہ سے طیاروں کی قیمت نہیں بتائی جاسکتی جب کہ ان کی پارٹی جہازوں کی قیمت عام ہونے کا ثبوت پیش کررہی ہے۔ خود طیارہ ساز کمپنی دسالٹ نے اپنی سالانہ رپورٹ میں ان جہازوں کی قیمت کا خلاصہ کیا ہے۔ انل امبانی کی کمپنی کی سالانہ رپورٹ میں بھی قیمتوں کا ذکر ہے۔ اس کے بعد وزارت دفاع میں مالیاتی شعبے کے سابق چیف سدھانشو موہنتی نے بھی قیمتوں کاانکشاف کیا ہے۔انہوں نے کہا کہ قیمت خفیہ رکھنے میں اگر ناکامی ہوئی ہے تو اس کی خلاف ورزی کرنے والوں کے خلاف ایف آئی آر درج کیوں نہیں درج کرائی جاتی۔ترجمان نے کہا کہ تازہ انکشاف آئی سی آئی سی آئی بینک کی منجمنٹ کی میٹنگ سے وابستہ دستاویزات میں کیا گیا ہے اور اب یہ دیکھنا ہے کہ مودی حکومت بینک کے خلاف کس طرح کی کارروائی کرتی ہے۔

SHARE

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here