بنگلور: 08نومبر (سیدھی بات نیوز سرویس ) ریاستِ کرناٹک میں دس نومبر کو ٹیپوجینتی کے نام پر ٹیپو شہید ؒ کی یومِ پیدائش سرکاری سطح پر منائی جاتی ہے، مگر بی جے پی عصبیت کے چلتے پہلے دن سے اس کی مخالفت کرتی آرہی ہے، اور میڈیا میں لگاتار اس پر ڈبیٹ چل رہے ہیں، ایسے موقع پر کل وزیرِ اعلیٰ کمار سوامی نے نامہ نگاروں سے بات کرتے ہوئے کہا کہ اگر بی جے پی کو ٹیپو جینتی کرنا پسند نہیں تو وہ گھر میں بیٹھیں رہیں، یہ ملک تمام سماج و طبقات ہے ، ہرطبقے اور سماج میں ان کی قوم کے لئے قربانی دینے والے قائدین موجود ہیں، یہ ان سے جڑے عقیدت مندی کی بات ہے، لہٰذا احتجاج بھی اگر کرنا چاہیں تو پرا من طریقے سے کریں، اگر عام عوام کے اثاثے اور سرکاری جائدادوں کو نقصان پہنچانے کی کوشش کی گئی تو پولس کو پہلے ہی آگاہ کردیا گیا ہے کہ ایسے شرپسندوں کے خلاف سخت کارروائی کریں۔ انہوں نے ان پر لگائے گئے الزمات کو دور کرتے ہوئے کہا کہ میں اس لئے ٹیپو جینتی نہیں منارہاہوں کانگریس کے ساتھ مخلوط حکومت کا وزیرِ اعلیٰ ہوں، ہم نے ایسے کئی پروگرام میں پہلے بھی شرکت کی ہے ، اور جے ڈی ایس کے دفتروں میں بھی کئی بار ٹیپو جینتی منائی گئی ہے، ہماراموقف اس کو لے کر پہلے سے بھی واضح ہے۔ملحوظ رہے کہ ٹیپو جینتی دس دسمبر کو ہونے والی ہے ، اس سلسلہ میں جو لوگ جلوس یا پھر اجلاس منعقد کررہے ہیں ان سے اپیل کہ بے کار کے نعرے بازیوں سے پرہیز کرتے ہوئے پر امن طریقے سے اجلاس منعقد کریں، اور ہماری وجہ سے فرقہ پرستوں کو اپنے ناپاک عزائم میں کامیاب ہونے نہ دیں۔

SHARE

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here