غازی آباد:13 اگست(سیدھی بات نیوز سروس/ زرائع)غازی آباد ضلع میں جمعہ کو ایک 8 سالہ معصوم بچی کی آبروریزی کا معاملہ سامنے آیا ہے ۔ الزام ہے کہ پڑوس کے ایک نوجوان نے معصوم کی آبروریزی کی ہے۔ واردات کے وقت بچی گھر میں اکیلی تھی ، کیونکہ اس کے اہل خانہ ہری دوار میں کانوڑ لانے کیلئے گئے ہوئے تھے ۔ اہل خانہ کے گھر لوٹنے کے بعد معصوم بچی نے اپنی آب بیتی سنائی ، جس کے بعد اس معاملہ کا انکشاف ہوا ۔ اہل خانہ کی تحریر پر پولیس نے مقدمہ درج کرکے ملزم نوجوان کو گرفتار کرلیا ہے ۔ رپورٹ کے مطابق ملزم نوجوان کی شناخت روی کے طور پر ہوئی ہے۔ بتایا جاتا ہے کہ گھر میں معصوم بچی کو اکیلا دیکھ پر ملزم نے آبروریزی کی۔ پولیس کے مطابق ملزم نوجوان بچی کو بہلا پھسلا کر ایک خالی مکان میں لے گیا اور واردات کو انجام دینے کے بعد اس کو ڈرا دھمکا کر گھر بھیج دیا ۔ ہری دوارسے ماں باپ جب کانوڑ لے کر لوٹے اور معصوم بچی نے اپنی آب بیتی سنائی ، تو ان کے پیروں تلے سے زمین کھسک گئی ۔ اہل خانہ فوری طور پر اس معاملہ کی شکایت لے کر تھانہ پہنچے اور ملزم نوجوان کے خلاف تھانہ میں رپورٹ درج کروائی ۔ اہل خانہ کی تحریر پر پولیس نے ملزم کے خلاف مقدمہ درج کرکے اس کی تفتیش شروع کردی اور جلد ہی اس کو گرفتار بھی کرلیا ۔ پولیس نے ملزم نوجوان پر پاسکو ایکٹ کے تحت مقدمہ درج کیا ہے۔

SHARE

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here